Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

پشتو موسیقی کے نامور گلوکار ہدایت اللہ کا انتقال

0 147

پشتو موسیقی کے نامور گلوکار ہدایت اللہ پشاور میں اپنے گھر میں انتقال کرگئے۔وہ متعدد بیماریوں کے باعث طویل عرصے سے علیل تھے۔انہیں پشاور کے علاقے بیرسکو میں بعداز نماز جنازہ سپرد خاک کردیا گیا، ان کے جنازے میں مداحوں کے ساتھ ساتھ ریڈیو، ٹی وی اور اسٹیج فنکاروں نے بھی بڑی تعداد میں شرکت کی۔ ان کے پسماندگان میں دو اہلیہ، دو بیٹے اور تین بیٹیاں ہیں۔۔

مخصوص آواز و انداز اور منفرد شخصیت کے مالک استاد ہدایت اللہ کا بنیادی طور پر تعلق گرچہ ڈاگ بےسود ضلع نوشہرہ سے تھا، جہاں 1940 کو وہ ایک زمیندار گھرانے میں پیدا ہوئے، جبکہ بعدازاں پشاور منتقل ہوگئے۔ استاد ہدایت اللہ نے ‘ڈیر ژڑیدلے یمہ، ڈیر کڑیدلے یمہ ستا سترگو خوڑلے یمہ’ نامی گیت سے مقبولیت حاصل کی، انہیں پشتو کا محمد رفیع بھی کہا جاتا تھا۔

استاد ہدایت اللہ اپنی زندگی میں امریکا، یورپ اور متحدہ عرب امارات کا بھی دورہ کرچکے ہیں جہاں انہوں نے پشتو، اردو، فارسی اور ہندکو زبان میں گلوکاری کی۔

استاد ہدایت اللہ نے بہت سی فلموں کیلئے گیت ریکارڈ کرائے جن میں علاقہ غیر، وربل، دیدن۔ جوارگر، دپختو تورہ، غازی اور ایسی ڈھیر ساری پشتو فلمیں شامل ہیں۔ اپنی بہترین گلوکاری پر انہیں پرائڈ آف پرفارمنس ایوارڈ سے بھی نوازا جاچکا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.