Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

بھارت ایل او سی پرفائرنگ کےذریعےدنیا کی توجہ مسئلہ کشمیر سےہٹاناچاہتاہے.پاکستان

وزیراعظم عمران خان 21 اور 22 جنوری کو قطر کا دورہ کریں گے، ترجمان

اسلام آباد۔ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر فیصل کاکہناہےکہ بھارت فائرنگ کےذریعےدنیا کی توجہ مسئلہ کشمیرسےہٹانا چاہتا ہے۔

اسلام آباد میں ہفتہ واربریفنگ کےدوران ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر فیصل کاکہنا تھاکہ مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی جارحیت کاسلسلہ جاری ہے، بھارتی افواج نہتےمعصوم شہریوں کو نشانہ بناتی ہیں،بھارتی جارحیت کےنتیجےمیں لائن آف کنٹرول پرشہری کی شہادت بھی ہوئی،بھارت فائرنگ کے ذریعے دنیا کی توجہ مسئلہ کشمیر سے ہٹانا چاہتا ہے،

پاکستان میں بارڈر ایکشن ٹیم نام کی کوئی فورس نہیں،بھارتی عزائم سیزفائرکی لگاتارخلاف ورزیوں سےظاہرہوتےہیں۔

دفتر خارجہ کےترجمان کاکہنا تھا کہ بھارت میں پاکستان کےسفارتی اہلکار کو حبس بےجا میں رکھا گیا،ایسا ویاناکنونشن کی خلاف ورزی کی گئی، دونوں ممالک کو مل بیٹھ کرایسے معاملات سےنمٹنا چاہیے۔

ڈاکٹر محمد فیصل کاکہنا تھا کہ پاکستان افغانستان کے مسئلہ کے حل کےلئےہرممکن تعاون کررہاہے،پاکستان نےامریکہ اورطالبان مذاکرات میں مدد کی ہے کیونکہ پاکستان سمجھتا ہےکہ انٹرا افغان ڈائیلاگ مسئلےکےحل کےلئےضروری ہے۔

بھارت کا افغانستان میں کوئی کردار نہیں ہے،نا ہی بھارت کا افغان عمل میں کوئی کردار ہے۔

ترجمان دفترخارجہ کاکہناتھاکہ قطرکےامیر کی دعوت پر وزیراعظم21 اور22 جنوری کو دو روزہ دورےپر قطرروانہ ہوں گے،شہزادہ محمد بن سلمان کے دورہ کی تاریخیں طے ہورہی ہیں،انکےدورہ میں مختلف معاہدوں پردستخط ہوں گے۔

ترجمان دفتر خارجہ نےامریکی وزارت خارجہ کی سینیئرافسرلیزاکرٹس کی پاکستان میں موجودگی کی تصدیق کرتےہوئےکہاکہ لیزا کرٹس کا دورہ افغان مفاہمتی عمل کے حوالے سے ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.