Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

تحقیقاتی کمیشن جلد قائم کیاجائےگاجس کامقصد 24ہزارارب کےقرضوں کا حساب ہے.وزیراعظم

اسلام آباد:وزیراعظم عمران خان کا کہناہےکہ تحقیقاتی کمیشن جلد قائم کیا جائےگاجس کامقصد 24ہزارارب کےقرضوں کا حساب ہے اور یہ کمیشن اقامہ رکھنے والوں کا حساب بھی کرے گا۔

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت بنی گالہ میں پارٹی رہنماؤں وترجمان کااجلاس ہوا،جس میں جہانگیرترین،حفیظ شیخ،عمرایوب،مراد سعید،شبرزیدی،سینیٹرفیصل جاوید،فردوس عاشق اعوان اوردیگر نےشرکت کی۔

اجلاس میں سیاسی صورتحال پرغوراورقومی اسمبلی میں آئندہ کی حکمت عملی سےمتعلق تبادلہ خیال کیاگیا۔مشیرخزانہ حفیظ شیخ نےبجٹ اورحکومتی اہداف سےمتعلق آگاہ کیا،چیئرمین ایف بی آرشبرزیدی نےٹیکس اصلاحات اوراہداف سےمتعلق اقدامات پراورجہانگیر ترین نے زراعت پالیسی سےمتعلق پیش رفت پربریفنگ دی جبکہ وزیراعظم عمران خان نےموجودہ صورتحال میں پارٹی بیانیےکےحوالےسےآگاہ کیا۔

ذرائع کےمطابق اس موقع پروزیراعظم عمران خان نےتحقیقاتی کمیشن سےمتعلق بھی بات کی اور کہا کہ تحقیقاتی کمیشن جلد قائم کیا جائے گا، کمیشن کا مقصد 24 ہزار ارب کےقرضوں کا حساب ہےاوریہ کمیشن اقامہ رکھنےوالوں کا حساب بھی کرے گا۔

وزیراعظم کاکہنا تھاکہ پاکستان کی تاریخ کاسب سےبڑا سود دےرہےہیں ملک کے4ہزار ریونیو میں سے2 ہزار قرض میں جاتاہے،کٹھن راستہ تھاجو طےکیا اورملک کو دیوالیہ ہونے سےبچالیا ہے،پاکستان کی معیشت مستحکم ہو چکی ہےاب وقت ہےمعیشت ٹیک آف کرےگی،30 فیصد کرنٹ اکاونٹ خسارہ میں کمی آئی ہے عوام کو غربت کی لکیرسےاوپرلاناحکومت کی اولین ترجیح ہےاس لئےاحساس پروگرام کابجٹ 100ارب سےبڑھاکر191 ارب تک لے گئے ہیں۔

ذرائع کاکہناہےکہ اجلاس میں بجٹ کےبعد کی صورتحال اوراپوزیشن رہنماؤں کی گرفتاریوں پراپوزیشن کےاحتجاج سےنمٹنےکےلئے حکمت عملی طےکی گئی،وزیراعظم نےکہاکہ گرفتارہونےوالےاین آراو کی تلاش میں ہیں،تمام ترجمان اورپارٹی رہنماپارلیمنٹ کےاندرو باہراور میڈیا پر جارحانہ حکمت عملی اختیار کریں اور کہ اپوزیشن کے ہر حملے کا ہر طریقے سے جواب دیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.