Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

حکومت کاپی آئی اے اور یوٹیلیٹی اسٹورز سمیت15اداروں کی نجکاری نہ کرنےکا فیصلہ

اسلام آباد: حکومت نے پی آئی اے اور یوٹیلیٹی اسٹورز سمیت 15 اداروں کی نجکاری نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اسلام آباد میں سینیٹرمیریوسف بادینی کی زیرصدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائےنجکاری کااجلاس ہوا۔سیکرٹری نجکاری نےبریفنگ دیتے ہوئےبتایاکہ ایک سےڈیڑھ سال میں18اداروں کی نجکاری کردی جائےگی جبکہ نجکاری کمیشن کی فہرست سے15اداروں کونکال دیاگیا ہے،جن اداروں میں ملازمین کی تعداد زیادہ ہےانہیں بھی نجکاری کےلیےپیش نہیں کیاجارہاکیونکہ حکومت بےروزگاری کوفروغ نہیں دینا چاہتی۔

سیکرٹری نجکاری نے بتایا کہ اداروں کی نجکاری نفع کمانے کی بنیاد پرکی جائےگی،آڈٹ کےذریعےاداروں کی سرکاری قیمت مقررہوگی، جو ادارہ جتنا زیادہ منافع کمارہاہےاس کا تخمینہ زیادہ لگایاجائےگا،پہلےمرحلےمیں8ادارےنجکاری کےلئےدیئےجائیں گےاورکچھ کمپنیاں بند کر دی جائیں گی۔
سیکرٹری نجکاری کا کہنا تھا کہ جن اداروں کو قانونی مسائل کاسامناہےانہیں فروخت نہیں کیاجائےگا،یوٹیلیٹی اسٹوراورپی آئی اےکو نجکاری سےنکال دیا گیا ہے،پی آئی اے کی کارکردگی بہتربنانےکےلئےاقدامات کئےجائیں گے،فرسٹ وومن بینک کا منافع کم ہےاسلیےنجکاری کی جا رہی ہے، لاکھڑا کول مائینز، جناح کنونشن سنٹر اور آر ایل این جی کے دو پاور پلانٹس کی نجکاری کی جائے گی۔

نجکاری کمیشن حکام نےبتایاکہ لاکھڑاپاورکی نجکاری سندھ حکومت کےشیئرکےباعث روکی جارہی ہے،بجلی کی تقسیم کارکمپنیاں اس وقت نقصان پہنچارہی ہیں،کوشش ہےکہ ڈسکوزکےلیےاچھاشراکت دارملے۔وزیرنجکاری محمد میاں سومرو نےکہاکہ ان اداروں پرگردشی قرضوں کا خطرہ ہے، اس لیے نجکاری سے قرضوں میں کمی ہوگی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.