Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

سابق وزیراعظم نواز شریف کی صحت میں بتدریج بہتری آرہی ہے

لاہور کے سروسز اسپتال میں زیر علاج سابق وزیراعظم نواز شریف کی صحت میں بتدریج بہتری آرہی ہے اور پلیٹیلیٹس کی تعداد  2 ہزار سے بڑھ کر 20 ہزار ہوگئی ہے۔

نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کے مطابق رات 8 بجے سابق وزیراعظم کے خون کے نمونوں میں پلیٹیلیٹس کی تعداد 16 ہزار رہ گئی تھی جو اسپتال منتقلی تک مزید کم ہوکر 12 ہزار رہ گئی تھی۔

سروسز اسپتال لاہور کے پرنسپل پروفیسر ایاز محمود کی سربراہی میں 6 رکنی میڈیکل بورڈ نواز شریف کا علاج کررہا ہے جس میں ڈاکٹر کامران خالد، ڈاکٹر عارف ندیم ،ڈاکٹر فائزہ بشیر، ڈاکٹر خدیجہ عرفان اور ڈاکٹر ثوبیہ قاضی شامل ہیں۔  میڈیکل بورڈ سینئر میڈیکل اسپیشلسٹ، گیسٹرو انٹرولوجسٹ، انیستھیزیا اسپیشلسٹ اور فزیشن پر مشتمل ہے۔

سروسز اسپتال میں دوران علاج نواز شریف کے خون میں پلیٹیلیٹس کی تعداد 2 ہزار رہ گئی تھی جس کے بعد انہیں 3 میگا یونٹس پلیٹیلیٹس لگائے گئے۔ پلیٹیلیٹس لگنے کے بعد نواز شریف کے خون میں پلیٹیلیٹس کی تعداد 20 ہزار ہوگئی ہے۔

ڈاکٹر پروفیسر ایاز محمود کا کہنا ہے کہ نواز شریف کے خون سے متعلقہ ٹیسٹوں کی رپورٹس تسلی بخش نہیں ہیں، پلیٹیلیٹس کی تعداد کو مانیٹر کیا جائے گا اور ضرورت پڑی تو مزید پلیٹیلیٹس لگائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف کا ڈینگی کا ٹیسٹ 2 بارکیا گیا اور دونوں بار منفی آیا ہے۔

سابق وزیراعظم کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ نوازشریف کو پلیٹیلیٹس کے 3 میگا یونٹس لگائے گئے اور رات میں مزید پلیٹیلیٹس لگائے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ نوازشریف کو پلیٹیلیٹس کی کمی کے باعث اندرونی یا بیرونی کہیں بلیڈنگ نہیں ہوئی اور ٹرانسفیوژن کے بعد پلیٹیلیٹس کاؤنٹ بہتر ہورہا ہے۔

لاہور کےسروسز اسپتال کی میڈیکل رپورٹ — فوٹو: سوشل میڈیا 

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.