Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

سرکاری اشتہارات کیس:پرویز خٹک کو13لاکھ 65ہزار جمع کرانےکا حکم

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے سرکاری اشتہارات سے متعلق کیس میں سابق وزیراعلی خیبرپختونخوا پرویز خٹک کی تصاویر آویزاں کرنے پر انہیں 13 لاکھ 65 ہزار روپے 10 دن میں جمع کرانے کا حکم دے دیا۔

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے سرکاری اشتہارات سے متعلق کیس کی سماعت کی۔

دوران سماعت ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل خیبرپختونخوا نے عدالت عظمیٰ کو بتایا کہ صوبے کے سابق وزیراعلی پرویز خٹک 13 لاکھ 65 ہزار روپے ادا کرنے کو تیار ہیں اور وہ یہ رقم اپنی جیب سے ادا کریں گے۔

جس پر عدالت نے پرویز خٹک کو 10 دن میں 13 لاکھ 65 ہزار روپے جمع کروانے کا حکم دیتے ہوئے رپورٹ طلب کر لی۔

واضح رہےکہ اسی کیس میں سابق وزیراعلی پنجاب شہبازشریف55لاکھ روپےجبکہ وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ14لاکھ روپےجمع کرا چکے ہیں۔

خیال رہےکہ28فروری2018کو چیف جسٹس میاں ثاقب نثارنےصوبائی حکومتوں کی تشہیری مہم کا نوٹس لیاتھااورپنجاب،سندھ اور خیبرپختونخوا حکومت کےسیکریٹری اطلاعات سےپرنٹ اورالیکٹرانک میڈیا کو دیئےگئےاشتہارات کی تفصیلات طلب کی تھیں۔

4 اپریل2018کو سپریم کورٹ نےسرکاری اشتہارات سےمتعلق کیس میں حکم دیاتھاکہ پرنٹ اورالیکٹرانک میڈیا پرکسی بھی سرکاری اشتہار میں سیاسی قائدین کی تصاویر شائع نہ کی جائیں۔

بعد ازاں8مارچ2018کو چیف جسٹس کی جانب سےوزیراعلیٰ شہبازشریف کوسرکاری اشتہارکی مد میں خرچ ہونےوالے55لاکھ روپے قومی خزانے میں واپس جمع کرانے کا حکم دیا گیا تھا۔

29نومبر2018 کو سپریم کورٹ نےسرکاری اشتہارمیں تصویر چھپوانےکےمعاملےپروزیراعلیٰ سندھ یاپاکستان پیپلزپارٹی(پی پی پی)کو 10 روز میں 14لاکھ 50ہزار روپے جمع کروانے کا حکم دیا تھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.