Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

سینٹ اجلاس:حکومتی و اپوزیشن کی ایماء پر غیرمعینہ مدت تک ملتوی

اسلام آباد۔چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کیخلاف اپوزیشن کی ریکوزیشن پرطلب کیاگیا اجلاس چند منٹ ہی جاری رہ سکا،حکومت اور اپوزیشن کی ایما پراجلاس غیرمعینہ مدت تک ملتوی کردیا گیا۔

ایوان بالا کےچیئرمین صادق سنجرانی نےاجلاس کی صدارت کی۔چئیرمین نےاپنےخلاف قرارداد پرتحریک پیش کرنےکی خود اجازت دی جس پراپوزیشن لیڈر راجہ ظفر الحق نےکہاکہ ہم نےتحریک جمع کرائی کہ چیئرمین کےمعاملےپرووٹنگ کرائی جائے۔راجہ ظفرالحق نے کہا کہ بجائے اس کے کہ تحریک عدم اعتماد کی قرارداد پر کارروائی کی جاتی ایوان میں رولز 218 پر بحث کرائی جارہی ہے۔

انہوں نےدرخواست کی کہ اجلاس کو ملتوی کیاجائےاوریکم اگست کو ہونے والےاجلاس میں قرارداد پرووٹنگ کرائی جائے۔قائد ایوان شبلی فراز نےکہاکہ ہم قائد حزب اختلاف کےموقف کی قدرکرتے ہیں۔چئیرمین نےاجلاس غیرمعینہ مدت کیلئے ملتوی کردیا۔اس سے قبل چیئرمین سینیٹ نیرولنگ دی کہ آئین کےآرٹیکل 12 کےتحت ایوان کےقواعدو ضوابط پر سختی سےعمل کیا جائے۔

انہوں نےسینیٹ سیکریٹریٹ کو ہدایت کی کہ اس حوالےسےتاخیر کوروایت نہ بنایاجائے،چیئرمین سینیٹ کی رولنگ میں کہاگیاکہ چیئرمین یا ڈپٹی چیرمین کوہٹانے کیلئےنوٹس صرف سینیٹ کےجاری اجلاس میں دیا جاسکتا ہے۔چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نےکہا کہ قرارداد کے طریقہ سےمتعلق مبینہ خدشات پھیلائےجارہےہیں، یہ کہاگیاکہ چیرمین کو ہٹانے کےحوالےسےآئین،قوانین اورچیئر کی رولنگ واضح ہے، اس حوالے سے اس وقت کے چیئرمین سینیٹ (رضاربانی) کی فروری 2016 کی رولنگ موجود ہے۔

صادق سنجرانی نےکہااپوزیشن کی طرف سےیہ کہاگیاہےکہ آج کےاجلاس میں یہ تحریک پیش کرنےکی اجازت نہیں دی گئی۔رولنگ میں کہا گیاکہ چیئرمین کو ہٹانےکی قرارداد کانوٹس شرائط پرپورا نہیں اترتا۔چیئرمین سینیٹ بارےمنفی پروپگنڈےکانقصان سینیٹ آف پاکستان کوہوتا ہے،اس قرارداد کانقصان چیئرمین سینیٹ کےعہدے کوپہنچ رہاتھا۔کہا گیا کہ اجلاس کےدوران نوٹس نہیں ملےاسکےباوجود تقسیم کرنےکے احکامات دیےاوروزارت پارلیمانی امورکو بھی اجلاس بلوانےکی سمری بھجوانےکیلئےلکھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.