Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

قبائلی اضلاع میں ڈھائی ہزاراساتذہ کی نئی بھرتیاں کی جائیں گی.ضیاء اللہ بنگش

ہرسکول میں آئی ٹی لیب کے قیام کے علاوہ آئی ایم یو کادائرہ کارقبائلی اضلاع کے سکولوں تک بڑھارہے ہیں،سابقہ فاٹاکے سرکاری سکولوں کوسہولتوں اورترقیاتی کاموں کی مد میں18ارب روپے دئیے جائینگے،خصوصی گفتگو 

پشاور۔خیبرپختونخواکےوزیراعلیٰ کےمشیربرائےتعلیم ضیاءاللہ خان بنگش نےکہاہےکہ صوبےمیں نئےضم شدہ قبائلی اضلاع میں ایٹاکےذریعےڈھائی ہزاراساتذہ کی نئی بھرتیاں کی جائیںگی مقامی انتظامیہ کوواضح ہدایات دیدی ہیں کہ ایک ماہ کےاندراندر بند سرکاری سکولوں کو دوبارہ کھولاجائے تاکہ سابقہ فاٹا میں کم شرح خواندگی پرقابوپایاجاسکے۔میڈیاسےبات چیت کرتےہوئےضیاءاللہ بنگش نےکہاکہ خیبرپختونخوا کی طرح سابقہ فاٹاکےتمام اضلاع میں یکساں تعلیمی سہولیات کی فراہمی یقینی بنائی جارہی ہے قبائلی اضلاع کےمقامی لوگ آئی ڈی پیزبننےکےبعد یہاں پر سکولز بند ہوگئےتھے تاہم متعلقہ حکام کوواضح احکامات جاری کردئیے ہیں کہ جہاں کہیں سکول بندہیں انہیں ایک ماہ کے اندر دوبارہ کھول دیاجائے اور سکولوں کی اپ گریڈیشن کے حوالے سے بھی کام جلد مکمل کیاجائے۔

انہوں نے کہاکہ قبائلی اضلاع کے ہرسکول میں آئی ٹی لیب قائم کیاجائے گا سکولوں میں حاضری یقینی بنانے کیلئےصوبائی حکومت انڈیپنڈنٹ مانیٹرنگ یونٹ (آئی ایم یو)کادائرہ کار قبائلی اضلاع تک بڑھائےگی ۔

ضیاء اللہ بنگش نےکہاکہ قبائلی اضلاع میں امن وامان کی صورتحال پہلےسےکافی بہترہے جہاں پرسول انتظامیہ اپنے امور بخوبی سرانجام دے رہی ہے امن قائم ہونےکےبعد آئی ڈی پیز کی ایک بڑی تعداد اپنےعلاقوں کو لوٹ رہی ہے،تمام قبائلی اضلاع میں ایک سروے کرایاجائےگا جس میں اس بات کاپتہ لگایاجائےگاکہ سکولوں میں بچوں کی تعدادمیں کتنااضافہ ہوا ہےاس مناسبت سےنئےسکولوں کی تعمیراوراپگریڈیشن کی جائے گی۔

انہوں نے کہاکہ بچیوں کوزیادہ سےزیادہ تعلیم دینے کیلئےمقامی کمیونٹی کوبھی اعتماد میں لیاجارہاہے اورہماری کوشش ہے کہ کمیونٹی کے تعاون سے لڑکیوں کی تعلیم کی شرح میں اضافہ کیاجائےانہوں نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر قبائلی اضلاع کی ترقی اوریہاں تعلیمی معیارکی بہتری کیلئے اقدامات اٹھائے جارہےہیں انضمام کے بعد سابقہ فاٹا کے سکولوں کوسہولتیں دینے کیلئے14ارب روپے دئیے جائینگے اسکے علاوہ چارارب روپے ترقیاتی کاموں کی مد میں خرچ ہونے ہیں جس میں ڈونرکاسپورٹ بھی حاصل ہوگا مشیرتعلیم نے کہاکہ تعلیمی لحاظ سے اگلےایک دوماہ بڑےاہم ہیں جس کےدوران قبائلی اضلاع میں شعبہ تعلیم میں کئی اہم تبدیلیاں آئیں گی تمام ڈی ای اوز اور ایس ڈی اوز کوفوری طور پراپنےدفاترآنےکی ہدایات دیدی ہیں جوافسریااہلکار ڈیوٹی پرنہیں آئےگا اسےنوکری سےفارغ کرکےگھربھیج دیاجائے گا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.