Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

ماضی کی طرح اپنےضلع کےوزیراعلیٰ نہیں،پورے صوبےکاوزیراعلی ہوں.محمودخان

پورےصوبےسمیت سات قبائلی اضلاع کی ترقی،ان کاویژن اورخواہش ہے،پسماندہ اضلاع کی ترقی کوخصوصی توجہ دیںگے.مخالفین نام نہاد سیاستدان بتائیں انہوں نےگذشتہ 70سالوں میں قوم اور ملک کو کیادیا،کشکول توڑنےکااعلان کرنےاورقرض اتارو ملک سنوارو کی مہم چلانے والوں نے غریب عوام کا جمع کیا ہوا پیسہ معلوم نہیں کہاں خرچ کیا،وزیراعلی خیبرپختونخوا

پشاور۔وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نےکہاہےکہ وہ ماضی کی طرح اپنےضلع کےوزیراعلیٰ نہیں رہیں گےبلکہ پورےصوبے کی نمائندگی کریں گےاورصوبےکےتمام علاقوں کےمفادات کا تحفظ کریں گے۔

پسماندہ بشمول پورے صوبے سمیت سات قبائلی اضلاع کی ترقی ان کا وژن اورخواہش ہے کیونکہ وہ پورے صوبے کے وزیر اعلیٰ ہے ۔پسماندہ اضلاع کی ترقی کو خصوصی توجہ دیں گے۔

اس سلسلےمیں ہوم ورک مکمل کرلیا ہے۔مخالفین سوال کرتےہیں کہ پی ٹی آئی کی حکومت نے100 روزہ ایجنڈے کے تحت کیا کیا ،میں واضح کرنا چاہتا ہوں کہ پی ٹی آئی کی حکومت نے مرکزی اورصوبائی سطح پر 100 روز ہ ایجنڈے کے تحت بہت کچھ کیا مگر ہمارے مخالفین نام نہاد سیاستدان بتائیں کہ انہوں نے گذشتہ 70 سالوں میں قوم اور ملک کو کیادیا ۔کشکول توڑنے کا اعلان کرنے اورقرض اتارو ملک سنوارو کی مہم چلانے والوں نے غریب عوام کا جمع کیا ہوا پیسہ معلوم نہیں کہاں خرچ کیا۔بیرون ملک لے گئے یا رائیونڈ میں محل بنالئے ۔اے این پی نے پختونوں کا استحصال کیا اور ان لوگوں نے پاکستان کو وراثت پدری سمجھ کر

بے دردی سے لوٹا۔پی ٹی آئی نے نام نہاد سیاستدانوں کے کرپٹ سسٹم کو چلینج کیا اور غریب عوام کو اٹھانے کے لئے جدوجہد شروع کی۔ہم بتدریج نئے پاکستان کی طرف بڑھ رہے ہیں۔

انہوں نےکرک میں تعلیم ،صحت ،گیس ،بجلی اوردیگربڑے مسائل جنگی بنیادوں پرحل کرنےکا یقین دلاتے ہوئےآئل ریفائنری اورپشاورتاڈی آئی خان روڈ کو دورویہ کرنے کے کام کاجلد افتتاح کرنے کااعلان کیا جبکہ پریس کلب کرک کےلئے20 لاکھ روپے اورکرک بارکے لئے 10 لاکھ روپے کی گرانٹ کا بھی اعلان کیا۔

ان خیالات کا اظہار اُنہوں نےضلع کرک کےایک روزہ مصروف ترین دورہ کےدوران عوامی جلسےاورکرک بارسےخطاب کرتےہوئےکیا ۔ایم این اے شاہد خٹک،صوبائی حکومت کےترجمان اجمل خان وزیراورپی ٹی آئی کےضلعی صدر میجر سجاد نے بھی جلسے سے خطاب کیا جبکہ پی ٹی آئی کےمقامی قائدین امتیازشاہد قریشی،ملک قاسم،فرید طوفان،جنرل سیکرٹری پی ٹی آئی عظمت خٹک،آئی ایس ایف کےنمائندگان ،ضلعی انتظامیہ کے حکام اورذرائع ابلاغ کے نمائندوں نے بھی جلسے میں شرکت کی ۔وزیراعلیٰ نے عوامی نیشنل پارٹی کے مقامی رہنما سجاد کی پی ٹی آئی میں شمولیت کا خیر مقدم کیا .

اُنہوں نے صوبائی حکومت کی ترقیاتی حکمت عملی اورپالیسیوں پر روشنی ڈالتے ہوئےواضح کیا کہ انہوں نے بطوروزیراعلیٰ حلف اٹھانے کے وقت ہی فیصلہ کرلیا تھا کہ صرف سوات کے نہیں بلکہ پورے صوبے کے وزیر اعلیٰ بنے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کاوژن اوران کی ہدایت بھی یہی ہے کہ پورے صوبے پرنظررکھی جائے۔سابق فاٹاکےنئےقبائلی اضلاع کی ذمہ داری بھی اب ہمارے کندھوں پر آگئی جس کو ہم نے خندہ پیشانی سےقبول کیاہے۔

وزیراعلیٰ نےکہاکہ صوبے کےتمام اضلاع سےانصاف کریں گےیہی وجہ ہےکہ آج کرک کےعوام کے درمیان موجود ہیں۔انہوں نے حکومت کے100روزہ پلان اوراس سلسلے میں مخالفین کے پروپیگنڈہ کابھی خصوصی حوالہ دیا۔

انہوں نےکہاکہ موجودہ مرکزی اورصوبائی حکومت نے100روزہ پلان کےتحت متعدد اہداف حاصل کرلئےہیں،متعدد پر کام جاری ہے جبکہ مستقبل کیلئے بھی قابل عمل منصوبہ بندی کی گئی ہے۔

پی ٹی آئی کے مخالفین بتائیں کہ انہوں نے 70 سالوں میں قوم کے لئے کیا کیا ۔ان لوگوں نے قومی خزانے کو اپنے باپ کا مال سمجھ کر بے دردی سے لوٹا۔1997 میں نواز شریف نے اعلان کیا کہ وہ کشکول توڑدیںگے اور قرض اتارو ملک سنوارو مہم چلائی جس میں پاکستان کے غریب ترین عوام نے بھی اپنا حصہ ڈالا۔مگر آج تک پتہ نہیں چلاکہ وہ پیسہ کہاں گیا.

صوبے میں ایس ایم ایس کے کارنامے بھی کسی سے پوشید ہ نہیں ۔وزیراعلیٰ نے صوبائی حکومت کی 5 سالہ اصلاحات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت نے تبدیلی کے ایجنڈے کے تحت نظر آنے والے اقدامات کئے ہیں۔پرویز خٹک ایک زیرک سیاستدان ہیں۔

انہوں نے اتحادی حکومت کے باوجود ہرشعبے میں تبدیلی کی بھر پور کوشش کی۔تعلیم ،صحت ،پولیس اوردیگرشعبوں میں شفافیت کو فروغ دیا اورمیرٹ پربھرتیاں یقینی بنائیں۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی موجودہ صوبائی حکومت تمام شعبوںمیں آئندہ 5 سالوں کے لئے منصوبہ بندی کرچکی ہے۔ ہم نے صوبائی شعبوں کو اٹھانے کے لئے قابل عمل خاکہ تیار کرلیا ہے ہمارے پاس 5 سال کا وقت ہے ہم نئے پاکستان اورنئے خیبرپختونخو ا کی طرف جارہے ہیں۔

وزیر اعلیٰ نے اس موقع پر کرک میں آئل ریفائنری کا وزیر اعظم کےہاتھوں جلد افتتاح کرانےکا اعلان کیا۔انہوں نے انکشاف کیا کہ پشاورسے ڈی آئی خان روڈ کو دورویہ کرنے کی منظوری ہوچکی ہے جس پرجلد کام شروع ہوگا۔انہوں نےکالج کےقیام ،ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کی اپ گریڈشن اوردیگرمطالبات پرہوم ورک کرنے کی یقین دہانی کرائی اورکہاکہ صوبےکی زیادہ ترمحصولات وفاق پرمنحصرہیں جونہی وفاق سےوسائل ملتےہیں ہم مذکورہ مطالبات پورےکریںگے۔پٹرولیم انسٹیٹوٹ کےحوالےسے ایک ادارہ پہلےسےمنظور ہوچکاہے۔انہو ں نے واضح کیا کہ کرک میں 21 سمال ڈیموں کی فزیبیلٹی ہوچکی ہے ۔

آئندہ5سالوں میں ڈیموں کی تعمیریقینی بنائیںگے۔انہوں نےکرک میں کرائے کی عمارتوںمیں نئے سکولوں کےاجراءکا بھی یقین دلایا اورکہا کہ رواں اےڈی پی میں نئےسکولوں کےقیام کی سکیم موجود نہیں ہےکیونکہ ہم پہلےسےموجود سکولوں کا معیاربلند کرنےپرتوجہ دے رہےہیں۔گیس اوربجلی کےمسائل کےحل کےلئےپہلےسےاعلیٰ سطح اجلاس کرچکےہے۔ہم نےاس مسئلےکےمستقل حل کےلئےہوم ورک تیار کرلیا ہے ۔

بجلی چوری کےخلاف ملک گیر مہم شروع ہےجس میں عوام کےتعاون کی ضرور ت ہے۔صوبے میں پیسکوکانظام تباہ حال ہےتمام ٹرانسمیشن لائنزاپ گریڈ کرنےکی ضرورت ہےاگرعوام بجلی چوری کےخلاف تعاون کریں تویہ مسئلہ ہمیشہ کےلئےحل ہوسکتاہے جس کے لئے ہم نے طریقہ کار وضح کرلیا ہے ۔قبل ازیں وزیر اعلیٰ سے مختلف ضلعی محکموں کےحکام،کرک بار،پریس کلب،انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن ،پی ٹی آئی ضلعی کابینہ اورمقامی ورکروں نے بھی ملاقات کی ۔

وزیر اعلیٰ نے اس موقع پرکمشنرکوہاٹ کو ضلع کرک میں ٹیوب ویلز پر قبضہ کرنے والوںکے خلاف کارروائی کرنے اور ٹیوب ویلز 24 گھنٹوں کے اندر واگزارکرنے کی ہدایت کی ۔انہوں نے واضح کیا کہ عوام کے مفادات پر سمجھوتہ نہیں کیاجائیگا۔انہوں نے کرک ہسپتال کا اچانک دورہ کیا اورہسپتال میں ناکافی عملے اور ناقص انتظامات پر برہمی کااظہار کیا ۔

انہوں نےہسپتال میں ڈاکٹروں،دیگر عملے،ادویات اوربہتر انتظامات یقینی بنانےکی ہدایت کی اورتنبیہ کی کہ غریب عوام کوصحت کی معیاری سہولیات کی فراہمی میں غفلت برداشت نہیں کی جائےگی۔حکومت نےڈاکٹروں اوردیگرعملےکی تنخواہوں میں اضافہ بہترکارکردگی سے مشروط کیاہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.