Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

وزیراعظم نے22کروڑ عوام سےخطاب کیا افسوس ہےکہ معاملےپرسیاست کی گئی.شفقت محمود 

جن لوگوں نےاداروں کا مذاق اڑایا انکی ایک دفعہ تومذمت کرتےآپ نےسیاست چمکائی،آپ چھوٹے چھوٹے فائدوں کےلیے بڑے مقصد کو قربان کرنےکیلئےتیارہیں عدالتوں کی رٹ اور قانون کی عملداری سےبڑا قومی مفاد کا معاملہ کیاہوسکتا ہے،بےجا ترکیبیں اورچھوٹی چھوٹی باتیں نکالنے سے گریز کریں. قومی اسمبلی میں اظہارخیال 

اسلام آباد۔وفاقی وزیر تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت شفقت محمود نےاپوزیشن رہنما سید خورشید شاہ جانب سےحکومت پرکی گئی تنقید پرکہا ہے کہ عمران خان پرکس بات پر تنقید کی جارہی ہے وزیراعظم نے22کروڑ عوام سےخطاب کیا  افسوس ہےکہ معاملے پرسیاست کی گئی جن لوگوں نے اداروں کا مذاق اڑایا انکی ایک دفعہ تو مذمت کرتےآپ نےسیاست چمکائی،آپ چھوٹے چھوٹے فائدوں کے لیے بڑے مقصد کو قربان کرنے کیلئے تیار ہیں عدالتوں کی رٹ اور قانون کی عملداری سے بڑا قومی مفاد کا معاملہ کیا ہوسکتا ہے،بے جا ترکیبیں اور چھوٹی چھوٹی باتیں نکالنے سے گریز کریں۔

جمعرات کو اسپیکراسد قیصرکی زیر صدارت قومی اسمبلی کےاجلاس میں وفاقی وزیرشفقت محمودنےاظہارخیال کرتےہوئےکہاکہ وزیراعظم نےگزشتہ روز22کروڑ عوام سے خطاب کیا،افسوس کے اس معاملےپر سیاست کی گئی،ہم اس معاملےپرسیاست نہیں کرنا چاہتے۔

دکھ ہوا کہ عمران خان کے ساتھ کھڑے ہونے کے بجائے ان پر تنقید ہورہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ جن لوگوں نے اداروں کا مذاق اڑایا انکی ایک دفعہ تو مذمت کرتے، وزیراعظم نے کل صاف کہا کہ کسی نے رٹ کو چیلنج کیا تو ہم برداشت نہیں کرینگے ۔وفاقی وزیر نے کہا کہ عمران خان نے کہا قانون کے فیصلے پر عملدرآمد کرائیں گے،اگر ہم اپنی صوابدید پر فیصلے کی منظوری نا منظوری کا فیصلہ کریں گے تو نظام کیسے چلے گا۔

انہوں نےکہاکہ آپ نے سیاست چمکائی،آپ چھوٹے چھوٹےفائدوں کے لیےبڑے مقصد کو قربان کرنے کے لیے تیار ہیں۔

انہوں نےکہاکہ یہ ہماری ذمہ داری ہےکہ ہم امن وامان کی صورتحال برقرار رکھیں،قانون نافذ کرنے والےادارے بھی حرکت میں ہیں ،قانون کی پاسداری کرنے والوں سے بھی بات ہورہی ہے،قانون کی پاسداری نہ کی گئی تو حکومت کی رٹ کمزور ہوگی،ہم نے خورشید شاہ کی بات خاموشی سے سنی،یہ جگتیں کرررہے تھے۔

انہوں نےکہاکہ عدالتوں کی رٹ اورقانون کی عملداری سےبڑا قومی مفاد کا معاملہ کیا ہوسکتا ہے،بےجا ترکیبیں اورچھوٹی چھوٹی باتیں نکالنےسےگریز کریں،سب اکھٹے ہوکر ملک میں قانون کی حکمرانی کی کوشش کریں۔

شفقت محمود نےکہاکہ اس سے پہلےجب ایسےواقعات ہوتے تھےتو حکومت کی جانب سےخاموشی چھا جاتی تھی،لیکن عمران خان بہادری کے ساتھ آئے اور 22 کروڑ عوام کے سامنے حکومت کا موقف بتایا۔

انہوں نےاپوزیشن رہنماؤں کو مخاطب کرتےہوئےکہاکہ بجائےاسکےکہ وزیراعظم کی تعریف کی جائے،آپ سیاست چمکارہےہیں۔شفقت محمود نےکہا کہ گزشتہ روز ہی پیپلز پارٹی کےشریک چیئرمین آصف علی زرداری نےکہاتھاکہ حکومت کےساتھ چلیں گےاوررات ہی امتحان آگیا۔

انہوں نےکہاکہ یہ موقع ہے کہ ہم ساتھ کھڑے ہوں اوراس اصول کےساتھ کھڑے ہوں جس پروزیر اعظم نےتقریرکی۔

شفقت محمود نے خورشید شاہ کو مخاطب کرکےکہا کہ آپ نےدرست اسٹینڈ نہیں لیا،کس چیزپرتنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں؟ ۔

ان کاکہناتھاکہ اگر اپنی سیاست چمکائیں گےتو ریاست کی رِٹ کمزور ہوگی،عدالتوں کی رِٹ قائم کرنی ہےتو اس سےبڑا قومی مفاد کا معاملہ کیا ہوگا۔

آخر میں شفقت محمود نے بتایا کہ اس حوالے سے مختلف طریقوں سے پیش رفت ہو رہی ہے اور جو قانون کی حکمرانی تسلیم کرنے کو تیار ہیں ان سے بات چیت بھی ہو رہی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.