Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

‘وزیراعظم کو جاکر بتادیں کہ اب وہ خود ڈیم کا افتتاح کریں’چیف جسٹس

اسلام آباد: چیف جسٹس پاکستان نے حکومت کی جانب سے مہمند ڈیم کے سنگِ بنیاد کی تاریخ تبدیل کرنے پر وفاقی وزیر فیصل واوڈا پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نےاپنا شیڈول دیکھا اور تاریخ بدل دی، یہ نہ دیکھا ہم نے بھی کام دیکھنا ہوتا ہے۔

دوران سماعت چیف جسٹس نے فیصل واوڈا کو مخاطب کرتے ہوئے حکومت سے شکوہ کیا کہ مہمند ڈیم کی گراونڈ بریکنگ تاریخ آپ نے بدل دی، مجھے بتائے بغیر ایسا کیا گیا اور مجھے بتانا بھی مناسب نہیں سمجھا۔

اس پر فیصل واوڈا نے عدالت سے کہا کہ وہ حکومت کی جانب سے معافی مانگتے ہیں، جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ہو سکتا ہے کہ اب میں اس کی گراونڈ بریکنگ میں شامل ہی نہ ہوں۔فیصل واوڈا نے کہا کہ آپ کو ضرور شرکت کرنا ہوگی۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ آئندہ سماعت پر چاروں وزراء آکر بتائیں کہ کیا کرنا ہے، وزیر اعظم کو معلوم ہی نہیں کہ کتنے معاملات پڑے ہوئے ہیں۔

جس پر فیصل واوڈا نے کہا کہ آپ کو ڈیم کی افتتاح کے لیے بھی بلائیں گے اور میں بھی آپ سے آنے کی درخواست کروں گا۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ اگر اجلاس نہ ہوا تو آئندہ سماعت پر شارٹ نوٹس پر بلالیں گے، انہوں نے مزید ریمارکس دیئے کہ وزیر خزانہ اور اٹارنی جنرل کو آئندہ سماعت پر بلالیں اور اگر وزیر خزانہ نہ آئے تو ہم نوٹس کر کے بلالیں گے۔

عدالت نے ریمارکس دیئے کہ ایکنگ کے اجلاس کی حتمی تاریخ سے بھی جمعہ کو آگاہ کیا جائے، لگتا ہے وفاقی حکومت نئی گاج ڈیم بنانا ہی نہیں چاہتی، وزیر آکر وضاحت دیں کہ ڈیم کی تعمیر کے لیے فنڈز جاری کیوں نہیں کیے گئے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ اگر ہم معاملہ نہ اٹھاتے تو 2 سے 3 سال مزید لگ جاتے، مہمند ڈیم کے افتتاح کی تاریخ ہمارے علم میں لائے بغیر کیوں ملتوی کی گئی؟ کیا ڈیم کی تعمیر میں ہمارا کوئی کردار نہیں؟

انہوں نے ریمارکس دیئے کہ حکومت نے اپنے طور پر ڈیم کی تعمیر کے لیے کچھ نہیں کیا، سپریم کورٹ نے ہی ڈیمز کی تعمیر کے لیے اقدامات کیے، حکومت نے اقدامات کرنے کے بجائے صرف اتنا کہا کہ 2025 میں پانی کی قلت ہوگی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم کو جاکر بتادیں کہ اب وہ خود ڈیم کا افتتاح کریں۔ بعد ازاں سپریم کورٹ نے مذکورہ کیس کی سماعت جمعہ تک کے لیے ملتوی کردی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.