Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

پشاورمیں وکلاءکنونشن(کل) ہوگا,وکلاء عدلیہ کی آزادی کیلئے متحد ہیں،پاکستان بار کونسل

آزادی تک جدوجہد جاری رکھیں گے،عدلیہ کی آزادی کو متاثرکرنے والےایجنڈےکی حوصلہ شکنی کرنی ہوگی،امید ہےسپریم جو ڈیشل کونسل ججزکےخلاف ریفرنسز خارج کردےگی،ہم نرم لہجے میں درخواست کرتےہیں ریفرنس واپس لئےجائیں،اسی میں ریفرنس بھیجنےوالوں اوربنانےوالوں کی عزت ہے،اگر ہماری عزت پرہاتھ ڈالا گیا توکوئی ہمیں روک نہیں سکےگا،امجد شاہ،حامد خان،علی احمد کرد اوریاسین آزاد کی پریس کانفرنس

اسلام آباد۔ پاکستان بار کونسل نےکہاہےکہ وکلاءعدلیہ کی آزادی کیلئےمتحد ہیں،آزادی تک جدو جہدجاری رکھیں گے،پشاورمیں وکلاء کنونشن (کل)ہفتہ کوہوگا،عدلیہ کی آزادی کومتاثرکرنےوالےایجنڈےکی حوصلہ شکنی کرنی ہوگی،امید ہےسپریم جوڈیشل کونسل ججزکےخلاف ریفرنسزخار ج کردےگی،ہم نرم لہجےمیں درخواست کرتےہیں ریفرنس واپس لئےجائیں،اسی میں ریفرنس بھیجنےوالوں اوربنانے والوں کی عزت ہے،اگر ہماری عزت پر ہاتھ ڈالا گیا تو کوئی ہمیں روک نہیں سکے گا۔

جمعہ کو یہاں میڈیا سےبات چیت کرتےہوئےپاکستان بارکونسل کےوائس چیئرمین امجد شاہ نےکہاکہ جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کیخلاف ریفرنس کی تیسری سماعت ہوئی ہے،پشاور میں(کل) ہفتہ کو وکلاء کنونشن کر رہے ہیں۔انہوں نےکہاکہ وکلاءکی تمام قیادت اس وقت سپریم کورٹ میں موجود ہےاورکسی قسم کے کوئی اختلافات نہیں ہیں۔

سینئر وکیل حامد خان نےکہاکہ میں وکلاءقیادت کو خراج تحسین پیش کرتاہوں،ہمیں خوشی ہےکہ وکلاء نےعدلیہ کی آزادی کیلئےآواز اٹھائی۔ حامد خان نےکہاکہ وکلاءعدلیہ کی آزادی کیلئے متحد ہیں،وکیل عدلیہ کی آزادی تک جدوجہد جاری رکھیں گے۔سینئر وکیل حامد خان نے کہاکہ تحریک کو کامیاب کرنے کے لئے ہر ممکن کوشش کریں گے۔

انہوں نے کہاکہ ہم امید کرتے ہیں کہ سپریم جوڈیشل کونسل ریفرنسز خارج کریگی۔ حامد خان نے کہاکہ عدلیہ کی آزادی کو متاثر کرنے والے ایجنڈے کی حوصلہ شکنی کرنی ہوگی۔ سینئر وکیل یاسین آزاد نے کہاکہ ستر سال سے طاقت کے بل بوتے پر سویلین آزادی کو سلب کیا گیا، یہ ریفرنسز بھی طاقت کے بل بوتے پر بنائے گئے۔

انہوں نےکہاکہ پاکستان کےتمام وکلاءایک ہیں،ہم کسی کو عدلیہ کی آزادی سلب نہیں کرنےدیں گے۔سابق صدرسپریم کورٹ بارایسوسی ایشن علی احمد کرد نےکہاکہ جھلسادینے والی گرمی میں ہم عدلیہ کی آزادی کےلئےکھڑے ہیں،ہمیں مجبورنہ کریں ہم نےفیصلہ کرلیا ہے۔

انہوں نےکہاکہ ہم نےکہاکہ ریفرنس بددیانتی پرمبنی ہے،صدرمملکت سےزیادہ ہماری بات میں وزن ہے۔انہوں نےکہاکہ(آج)ہفتہ کوپورے ملک میں احتجاج کیاجائیگا۔انہوں نےکہاکہ ہم سپریم کورٹ کےججزکےلئےلڑرہےہیں،آج قاضی فائزعیسیٰ ہیں توکل کسی اورجج کی باری آئیگی۔

انہوں نےکہاکہ جب اپنی مرضی کےججز لگائیں گےتوکوئی سپریم کورٹ نہیں آئیگا۔انہوں نےکہاکہ وکلاء عدلیہ کی آزادی کےلئےایک ہیں، ہم نرم لہجے میں درخواست کرتےہیں ریفرنس واپس لئےجائیں۔انہوں نےکہاکہ اسی میں ریفرنس بھیجنےوالوں اوربنانےوالوں کی عزت ہے، اگرہماری عزت پرہاتھ ڈالا گیا تو کوئی ہمیں روک نہیں سکےگا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.