Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

1988کےبعد پہلی مرتبہ مولانافضل الرحمن اقتدار سےباہرہیں،انکاذاتی درد سمجھتےہیں،فردوس عاشق اعوان

اپوزیشن اپناوجود برقراررکھنے کیلئے ہتھکنڈےاستعمال کررہی ہے،بجٹ کےبعد اپوزیشن کی سیاست بھی دفن ہوجائیگی،وزیراعظم عمران خان کاپاکستان کوریاست مدنیہ کی طرزپربنانےکاخواب تعلیم کےزریعےممکن ہوگا،ہم عوام کوجوابدہ ہیں اوران کی عدالت میں سرخرو ہونگے، تقریب سےخطاب،میڈیا سےبات چیت

اسلام آباد۔ وزیراعظم کی معاون خصوصی برائےاطلاعات ونشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نےکہاہےکہ1988کےبعد پہلی مرتبہ مولانا فضل الرحمن کو اقتدار سےباہررہنا پڑارہاہے،مولانا کاذاتی درد سمجھتے ہیں،اپوزیشن اپنا وجود برقراررکھنے کیلئےہتھکنڈے استعمال کررہی ہے،بجٹ کے بعد اپوزیشن کی سیاست بھی دفن ہو جائیگی،وزیراعظم عمران خان کا پاکستان کو ریاست مدنیہ کی طرز پر بنانے کا خواب تعلیم کے زریعے ممکن ہو گا،ہم عوام کو جوابدہ ہیں اور ان کی عدالت میں سرخرو ہونگے۔

منگل کووزیراعظم کی معاون خصوصی برائےاطلاعات ونشریات ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نےتعلیمی ایکسپو سےخطاب اورمیڈیا سےگفتگو کرتےہوئےکہاکہ ہمیں اس ملک میں روایتی تعلیمی نظام سےنکلےکرجدید تعلیم کی طرف بھی جاناہے۔انہوں نےکہاکہ وزیراعظم پاکستان مسلسل اس ملک میں کوالٹی تعلیم کی بات کر رہےہیں۔

ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نےکہاکہ کابینہ میں نئی تعلیمی پالیسی کےحوالےسے بات کرچکے ہیں،تحریک انصاف نےاپنےمنشورمیں بھی تعلیم کےحوالےسےبہت اہم نکات شامل کیےتھے۔ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نےکہاکہ اب حکومت کی ترحجات صوبوں کے ساتھ مل کر ہر بچے کو معیاری تعلیم فراہم کرنا ہے،جو بچے سکولوں سے باہر ہیں انکو واپس سکولوں میں ڈالنے کے لیے اقدامات کے جارہے ہیں۔

انہوں نےکہاکہ سکولوں میں ایونگ کلاسز کا اجراءپربھی غورکیاجارہا ہے۔انہوں نےکہاکہ وزیراعظم عمران خان کاخواب پاکستان کو ریاست مدنیہ کی طرزپربنانےکا وہ بھی تعلیم کےزریعےممکن ہو گا۔معاون خصوصی اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہاکہ ایجوکیشن ایکسپو ملک سے نا خواندگی کے خاتمے میں معاون ثابت ہوگی۔

انہوں نےکہاکہ ایجوکیشن ایکسپوکامقصد روایتی تعلیم سےنکل کرجدید تعلیم ہے۔انہوں نےکہاکہ وزیراعظم ملک میں معیاری تعلیم کے فروغ پرزوردیرہےہیں۔انہوں نےکہاکہ وزیراعظم ملک میں یکساں نصاب اورنظام تعلیم کیلئےکوشاں ہیں۔انہوں نےکہاکہ عہد حاضرکے چیلنجز سے نمٹنے کیلئے اعلیٰ تعلیم اہمیت کی حامل ہے۔انہوں نےکہاکہ حکومت نےتعلیم کوترجیح دیتےہوئےاسےسرفہرست رکھاہے۔معاون خصوصی نےکہاکہ وزیراعظم عمران خان بنیادی تعلیم سہولیات کی فراہمی کیلئے پرعزم ہیں۔انہوں نےکہاکہ دوکروڑبچوں کاسکولوں سےباہرہونابڑا چیلنج ہے۔

انہوں نےکہاکہ وزیراعظم کی تجویزہےکہ نجی وسرکاری تعاون سےتعلیمی سہولتیں دی جائیں۔انہوں نےکہاکہ نجی شراکت داری سےملک میں شرح خواندگی میں اضافہ کیا جاسکتاہے۔انہوں نے کہاکہ ماضی میں مسلمانوں نےسائنس وٹیکنالوجی میں مثالی ترقی کی۔انہوں نے کہاکہ بد قسمتی سے تعلیمی میدان میں پیچھے رہ جانے سے ترقی کی منزل گنوا دی ۔ انہوں نے کہاکہ غیر مسلم اقوام نے قرآن کے اصولوں سے فائدہ اٹھا کر ترقی کی۔

انہوں نےکہاکہ تعلیم کےشعبےمیں اجتہاد وقت کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہاکہ تعلیم سےپہلےبچوں کی بہترین تربیت والدین کی ذمہ داری ہے۔انہوں نےکہاکہ پاکستان کو معاشی چیلنجزدرپیش ہیں۔انہوں نےکہاکہ آج کےدورمیں جنگیں سرحدوں پرنہیں بلکہ ٹیکنالوجی کی مدد سے لڑی جاتی ہیں۔انہوں نےکہاکہ تبدیلی لانےکاسب سےمؤثرہتھیارمعیاری تعلیم ہے۔انہوں نےکہاکہ الفاظ کاسہارا لےکرعوام کوگمراہ نہیں کیاجاسکتا۔

میڈیاسےبات چیت کرتےہوئےکہاکہ مولاناصاحب کاذاتی درد سمجھ سکتےہیں،1988کےبعد پہلی مرتبہ مولانا صاحب کواقتدارسےباہررہنا پڑا رہاہے۔ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نےکہاکہ وہ اپنےدرد کو عوام کا درد بناکاپیش کرناچاہتےہیں۔انہوں نےکہاکہ مولانا صاحب عوام آپ کے چہروں کو اچھی طرح جانا اور پہچان چکی ہے۔انہوںنے کہاکہ بجٹ کے بعد اپوزیشن کی سیاست بھی دفن ہو جائے گی۔

انہوں نےکہاکہ عمران خان کی قیادت پرپورے پاکستان کو یقین اوربین الاقوامی دنیا بھی اس پراعتماد کررہی ہے۔انہوں نےکہاکہ اپوزیشن جانتی ہےبجٹ کی منظوری سےپاکستان معاشی طورپرمستحکم ہوگا۔انہوں نےکہاکہ اپوزیشن اپنےاقتدارسےدوری کےدرد کو عوام سے جوڑنا چاہتی ہے۔انہوں نےکہاکہ اپوزیشن اپنا وجود برقراررکھنےکیلئے ہتھکنڈےاستعمال کررہی ہے۔

انہوں نےکہاکہ سیاسی نومولود لیڈروں کابیانیہ انکی اپنی جماعتیں مسترد کرچکی ہیں،ہم عوام کوجوابدہ ہیں اورانکی عدالت میں سرخرو ہونگے۔ انہوں نے کہاکہ عوام انہیں مسترد کر چکی ہے اور24ہزارارب قرض کاحساب مانگ رہی ہے،ماضی کے حکمرانوں نے صرف اپنے بچوں کا سوچا اور عوام کو تعلیم سے محروم رکھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.