Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad
براؤزنگ زمرہ

اُردو ادب

سفرنامہ کیا ہے؟ سفرنامہ نگار کیسے بنا جا سکتا ہے؟ – حسنین نازشؔ

سفر عربی زبان کا لفظ ہے جس کے معنی ’’مسافت کرنا‘‘ کے ہیں۔ سفری داستان کو لکھنا ''سفرنامہ‘‘ کہلاتا ہے جس کا مقصد قارئین کو اپنے سفری حالت و واقعات سے آگاہ کرنا ہے۔ عام قاری کے اندر دیارِ غیر کے بارے میں آگہی فرائم کرنا اور سفری داستان گوئی سفرنامے کے مقاصد ہو سکتے ہیں۔ سفرنامے کی صنف میں تمام اصناف کو اکٹھا کر دیا جاتا ہے۔ اس میں داستان کا داستانوی طرز، ناول کی فسانہ طرازی، ڈرامے کی منظر کشی،…

پرانی کتابیں – فخرالدین کیفیؔ

پرانی کتابوں کی ترتیب سے بہت فائدہ ہوتا ہے کبھی کوئی غزل مل جاتی ہے کبھی کوئی گم شدہ دستاویز کبھی کسی کی دی ہوئی تصویر کبھی مرجھائے ہوئے پھول بھولی بسری یادوں کا سرمایہ چھپائے رکھتی ہیں ہائے کیا چیز ہیں کتابیں بھی

نئے شہر پرانی بستیاں – کتاب کی افتتاحی تقریب

آج کے پروگرام میں بھاگ دوڑ بہت ہے. ناشتا کیا، باتیں کیں، اُٹھ کھڑے ہوئے. بھاگم بھاگ اس بُک شاپ پہ پہنچے جہاں میرے انگریزی ترجموں کا مجموعہ ''Leaves‘‘ اپنی تقریبِ افتتاح میں میرا انتظار کر رہا تھا. چند قاری، چند لکھنے والے جمع تھے، کوئی انگریزی کا، کوئی تیلگو کا، کوئی کنڑ کا. مختصر تعارفی کلمات بھلہ صاحب کی طرف سے. مختصر گفتگو آصف فرخی کی. چھوٹی سے کہانی میری طرف سے. اور یہاں سے میں نے اشارہ لیا کہ…

ترک خلیفہ سلطان احمد سوئم کی تعمیر شدہ لائبریری

یہاں ہم عمارت (توپ کاپی) میں داخلے کے بعد سب سے پہلے سلطان احمد سوئم کی 1718ء کی تعمیر شدہ لائبریری میں گئے. سلطان احمد سوئم خود ایک خطاط اور کتاب دوست بادشاہ تھا. لائبریری کا دستور بنایا گیا تھا کہ اس سے کوئی کتاب باہر نہیں جائے گی لیکن سلطنت کے ساتھ یہ قانون بھی ختم ہوگیا اور یہاں کے تمام مخطوطات توپ کاپی کی مرکزی لائبریری میں منتقل کر دیے گئے. لائبریری کا ماحول بہت پرسکون اور روشن ہے. دو…

سیاح کی مناجات – ابنِ انشا

”چلتے ہو تو چین کو چلئے‘‘، ”آوارہ گرد کی ڈائری‘‘، ”دنیا گول ہے‘‘، اور اب یہ ”ابن بطوطہ کے تعاقب میں‘‘ آخر اتنی کتابیں کون پڑھے گا. اتنے قصے کون سنے گا. اس پر ہمیں سیاح کی مناجات یاد آتی ہے جو پچھلے دنوں آرٹ نجوالڈ نے اپنے کالم میں لکھی تھی۔ نمونہ کلام: ”اے خداوند! اس بندہ عاجز یعنی اس سیاحِ غریب کو اپنی نظرِ کرم کی بھیک دے، جس کے مقدر میں دیس بدیس پھرنا، خوار ہونا، فوٹو لینا، تصویری پوسٹ کارڈ…