Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad
براؤزنگ زمرہ

ثاقب بٹ

کشمیر بنے گا پاکستان – ثاقب محمود بٹ

فاطمہ سکول کا کام مکمل کر کے اداس بیٹھی تھی کہ باباجان قریب آئے اور بہت پیار سے پوچھنے لگے: ’’کیا ہوا فاطمہ بیٹی؟ کیوں اداس ہو؟‘‘ ’’باباجان، اس بار ہماری کلاس ٹیچر نے کہا ہے کہ5 فروری کو یومِ یکجہتیٔ کشمیر منایا جا رہا ہے، سب بچے اِس دن کی مناسبت سے ایک خوب صورت سا مضمون لکھ کر لائیں۔’’فاطمہ نے جواب دیا۔‘‘ باباجان نے حیرت سے پوچھا: ’’ارے بیٹی اس میں اس قدر اُداس ہونے والی کیا بات ہے؟ آپ…

کتاب اورکہانی – ثاقب محمود بٹ

پیارے بچو! ہم آپ کے لیے بچپن کی کہانیوں کا مجموعہ لے کر حاضر ہوئے ہیں۔ بچوں کے عالمی ادب سے منتخب شدہ ان تینوں کتب کو اُردو قالب میں ڈھالنے کا سہرا سید سعید نقوی کے سر ہے۔ یہ کتابیں، کہانیوں کے ساتھ ساتھ خوب صورت تصویری خاکوں پر بھی مشتمل ہیں۔ ان کتابوں کی تفصیل کچھ یوں ہے: 1۔ چاکی اور دریا: مصنف: البرٹ چنوالو موگواچی قیمت: 165روپے البرٹ چنوالو موگواچی بے (Albert…

پاکستان کے ممتاز محقق ڈاکٹر ندیم شفیق ملک وفات پا گئے.

نامور ادیب، ماہرِ اقبالیات و سیاسیات، ماہر بین الاقوامی تعلقات و قومی سلامتی، ممتاز محقق اور کتاب دوست ڈاکٹر ندیم شفیق ملک انتقال کر گئے۔ ذرائع کے مطابق ڈاکٹر ندیم شفیق ملک کو طبیعت خراب ہونے پر ہسپتال منتقل کیا گیا، لیکن وہ جانبز نہ ہو سکے۔ ہسپتال ذرائع کے مطابق ڈاکٹر ندیم شفیق ملک کا انتقال ہارٹ اٹیک کی وجہ سے ہوا اور وہ ہسپتال پہنچنے سے قبل ہی خالق حقیقی سے جاملے۔ ان کی نمازہ جنازہ، جمعہ کی…

پاکستان ٹیلی ویژن کی کہانی – شبیر ابن عادل

پی ٹی وی کی سالگرہ کے موقع پر خصوصی تحریر ہمارے محلے میں سب سے پہلے جمیل قصائی نے ٹیلی ویژن سیٹ خریدا تھا۔ جمیل قصائی کے ہاں ٹیلی ویژن کا آنا تھا کہ پورے محلے میں کہرام مچ گیا، ہر ایک اپنی جمع پونجی گننے اور قرض ادھار کے چکر میں پڑگیا۔ جمیل بھائی نے ٹی وی گھر میں رکھنے کے بجائے بانس کا ایک مچان بنا کر اس پر رکھ دیا، بس پھر کیا تھا لوگوں کا ہجوم لگ گیا۔ جن میں بوڑھے، بچے، مرد اور عورتیں سب ہی…

کورونا… سماجی دُوری اور ثابت قدمی – ثاقب محمود بٹ

ہمیشہ کی طرح آج بھی سب بچے رات کے کھانے کے بعد بڑی امی جی کے گرد جمع ہو گئے۔ کورونا کی وبا اور لاک ڈاؤن نے جہاں بڑوں کی زندگی کو شدید دھچکا لگایا ہے وہاں بچے بھی اس سے متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکے۔ بلکہ یوں کہا جائے تو بے جا نہ ہو گا کہ بچوں کو کورونا کے لاک ڈاؤن سے براہِ راست اثر قبول کرنا پڑا ہے جس کی بڑی وجہ یہ ہے کہ ان کے سکول ایک بار پھر سے بند ہیں اور پڑھائی سے لے کر دن کا کھانا اور ہر طرح…

نیشنل بک فاﺅنڈیشن کی شائع کردہ کتاب ”جگمگ تارے“ کی تقریب رونمائی

• حنیف عابد کی کہانیاں بچوں میں تخلیقی صلاحیت ابھارتی ہیں ، پروفیسر سحر انصاری • کراچی پریس کلب میں نیشنل بک فاﺅنڈیشن کی شائع کردہ کتاب ”جگمگ تارے“ کی تقریب رونمائی کا انعقاد • حمیرا طہر، طارق جمیل ، معراج جامی، علی حسن ساجد ، اے ایچ خانزادہ ، ڈاکٹر نزہت عباسی اورصالحہ صدیقی کا خطاب • ممتاز شاعر اختر سعیدی اور ابن ِ عظیم فاطمی نے منظوم خراج تحسین پیش کیا ، بڑی تعداد میں ارباب علم و دانش کی شرکت…

نصف صدی بعد لائبریری کو کتاب واپس کرنے پر خاتون کا نام گنیز بک میں درج

ہم اکثر سنتے اور دیکھتے آئے ہیں کہ کسی کو کتاب مستعار دینا بے وقوفی ہے اور مستعار لی ہوئی کتاب واپس کرنا اس سے بڑھ کر بڑی حماقت ہے۔ معاشرہ ایسے افراد سے بھرا پڑا ہے جو اس عمل پر کار فرما ہیں. یہ سچ ہے کہ کتابیں پڑھنے کے لینے والے شوقین کتب واپس لوٹانے میں نہایت سُست واقع ہوتے ہیں۔ نہ جانے لوگوں کو کیوں کتابیں واپس کرنا ایک عذاب لگتا ہے اور پھر کتاب لائبریری کی ہو تو صارف یا قاری اسے واپس کرنے میں…

نئے شہر پرانی بستیاں – کتاب کی افتتاحی تقریب

آج کے پروگرام میں بھاگ دوڑ بہت ہے. ناشتا کیا، باتیں کیں، اُٹھ کھڑے ہوئے. بھاگم بھاگ اس بُک شاپ پہ پہنچے جہاں میرے انگریزی ترجموں کا مجموعہ ''Leaves‘‘ اپنی تقریبِ افتتاح میں میرا انتظار کر رہا تھا. چند قاری، چند لکھنے والے جمع تھے، کوئی انگریزی کا، کوئی تیلگو کا، کوئی کنڑ کا. مختصر تعارفی کلمات بھلہ صاحب کی طرف سے. مختصر گفتگو آصف فرخی کی. چھوٹی سے کہانی میری طرف سے. اور یہاں سے میں نے اشارہ لیا کہ…

ترک خلیفہ سلطان احمد سوئم کی تعمیر شدہ لائبریری

یہاں ہم عمارت (توپ کاپی) میں داخلے کے بعد سب سے پہلے سلطان احمد سوئم کی 1718ء کی تعمیر شدہ لائبریری میں گئے. سلطان احمد سوئم خود ایک خطاط اور کتاب دوست بادشاہ تھا. لائبریری کا دستور بنایا گیا تھا کہ اس سے کوئی کتاب باہر نہیں جائے گی لیکن سلطنت کے ساتھ یہ قانون بھی ختم ہوگیا اور یہاں کے تمام مخطوطات توپ کاپی کی مرکزی لائبریری میں منتقل کر دیے گئے. لائبریری کا ماحول بہت پرسکون اور روشن ہے. دو…

لائبریری (At the Public Library)

لائینل (Lionel) اور یولی سیز (Ulysses)... دونوں لائبریری کی طرف روانہ ہوئے. جب وہ اس سادہ مگر صاف ستھری عمارت میں داخل ہوئے تو چاروں طرف دہشت انگیز سکوت طاری تھا. فرش، الماریاں ہر چیز دیکھا پر خاموشی چھائی ہوئی تھی. کچھ بوڑھے اخبار پڑھ رہے تھے. چند مقامی فلاسفر ضخیم کتابیں لیے بیٹھے تھے. تین چار طلباء ریسرچ میں مشغول تھے. مگر علم کے یہ سب متلاشی خاموش تھے. لائینل ماحول سے اتنا متاثر ہوا کہ منہ سے…