Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

ننھی زینب کا قاتل میڈیا کے سامنے پیش کر دیا گیا

0 971

چارسدہ پولیس نےانتہائی جانفشانی اور اعیلیٰ پیشہ ورانہ مہارت کا مظاہرہ کرتے ہوئے زیادتی کے بعد قتل کی جانے والی ڈھائی سالہ زینب کے قاتل کو گرفتار کر کے میڈیا کے سامنے پیش کر دیا۔ یاد رہے پولیس نے چند دن پہلے کم سن بچی کیساتھ جنسی زیادتی اور پھر قتل کرنے میں ملوث ملزم کو گرفتار کر لیا تھا۔

ضلعی پولیس افسر کا کہنا تھا کہ 45 سالہ ملزم لال محمد کا تعلق سردریاب کے گاؤں جبہ کورونہ سے ہے اور اس کی نشاندہی پولیس نے جائے وقوعہ سے آلہ قتل، بچی کے جوتے اور دیگر شناختی چیزیں بھی برآمد کر لیں۔

پیر کے روز وزیر قانون سلطان محمد خان اور ضلعی پولیس آفیسر محمد شعیب کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے صوبائی وزیر اطلاعات کامران بنگش نے کہا کہ پوسٹمارٹم رپورٹ میں ثابت ہوا بچی سے زیادتی کی گئی، واقعہ رپورٹ ہونے پر چارسدہ اور پشاور پولیس نے زینب قتل کیس پر کام شروع کیا اور تین روز کے اندر ملزم کو گرفتار کر لیا۔

انہوں نے بتایا کہ پولیس نے ملزم سے مقتولہ کے جوتے اور کپڑے برآمد کر لئے ہیں جبکہ ملزم کی نشاندہی پر آلہ قتل اور دیگر شناختی چیزیں بھی برآمد ہوئی ہیں۔

صوبائی وزیر قانون کا کہنا تھا کہ اس کیس کی نگرانی وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان خود کر رہے تھے،

ضلعی پولیس آفیسر شعیب نے کہا کہ اس واقعہ کے بعد پولیس نے فوری طور پر 388 گھروں اور ان کے مکینوں کے کوائف اکٹھے کئے اور شک کی بنیاد پر گرفتاریاں بھی کی گئیں۔ گرفتار کئے جانے والے مشتبہ افراد میں یہ ملزم بھی شامل تھا۔ دوران تفتیش لگ بھگ تین دن قبل ملزم لعل محمد نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا تھا تاہم میڈیکل رپورٹ آنے کا انتظار تھا۔

خیال رہے کہ چارسدہ کے ایک نواحی گاؤں میں 6 اکتوبر کو ڈھائی سالہ زینب کے اغواء، جنسی زیادتی اور بہیمانہ قتل کا واقعہ سامنے آیا تھا۔ سفاک ملزم نے ڈھائی سالہ زینب کو گھر کے سامنے سے اغواء کرکے ایک کلومیٹر دور کھیتوں میں لے جا کر جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کیا تھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.