Latest Urdu news from Pakistan - Peshawar, Lahore, Islamabad

اپوزیشن جماعتوں کا الیکشن کمیشن کا دفاع کرنے کے عزم کا اعادہ

0 81

اسلام آباد: حکومت کی جانب سے مسلسل الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) پر تنقید کی جارہی ہے، اپوزیشن نے اعلان کیا ہے کہ وہ پارلیمنٹ کے اندر اور باہر ای سی پی کا دفاع کرے گی۔ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے دوران الیکشن ایکٹ کو بلڈوز کرنے کے متنازع بل منظور کرانے کے حکومتی منصوبے پر اپنے تحفظات کا اظہار کرنے کے لیے پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) اور عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے وفود نے چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجا سے ملاقات کی۔ وفد کے اراکین نے وفاقی وزرا کی جانب سے الیکشن کمیشن اور چیف الیکشن کمشنر کے خلاف دیے گئے ریمارکس پر بھی تشویش کا اظہار کیا۔

ملاقات کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے سابق چیئرمین سینیٹ اور پیپلز پارٹی کے رہنما نیئر حسین بخاری نے کہا کہ اپوزیشن، پارلیمنٹ کے اندر اور باہر ای سی پی اور سی ای سی کی حمایت کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ وزرا کو الیکشن کمیشن کے خلاف توہین آمیز نوعیت کے بیانات نہیں دینے چاہئیں، آئین کے تحت انتخابات کا انعقاد الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے۔

سینیٹ میں پیپلز پارٹی کی پارلیمانی لیڈر شیری رحمٰن نے آئندہ عام انتخابات میں الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کے استعمال کے لیے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے ذریعے قانون سازی کی کوششوں کے خلاف خبردار کیا۔

ووٹنگ مشینوں کو جلد بازی میں متعارف کرانے کے حکومتی اصرار کو ‘پری پول دھاندلی کی تیاری’ قرار دیتے ہوئے سینیٹر نے کہا کہ سیاسی مخالفین کو برابری کا میدان دینے سے انکار کی کوششیں جاری ہیں۔ انہوں نے حکومت کو اس اقدام کے خلاف خبردار کرتے ہوئے کہا کہ ایسے حالات میں انتخابات کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہوگی۔

شیری رحمٰن نے کہا کہ ‘عالمی یوم جمہوریت’ کے موقع پر حکمراں جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما جو بیان دے رہے ہیں اس کے بالکل برعکس موجودہ حکومت حقیقت میں اداروں، سیاسی جماعتوں اور میڈیا سے تصادم کی راہ پر گامزن ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.